سعودی حکومت نے عمرہ اجازت نامے سے متعلق پھیلی جھوٹی خبروں پر وضاحت جاری کردی۔عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق سوشل میڈیا پر اس طرح کی من گھرٹ باتیں زیر گردش ہیں کہ کورونا ویکسین لگانے والوں کو مسجد الحرام جانے، نماز پڑھنے اور عمرہ ادا کرنے کے لیے اجازت نامے سے استثنیٰ دیا گیا ہے۔ رپورٹ

میں بتایا گیا کہ افواہ پر ردعمل دیتے ہوئے حرمین شریفین انتظامیہ کے ذرائع نے سوشل میڈیا پر پھیلائی جانیوالی خبر کی تردیدی کی ہے ۔اس ضمن میں انتظامیہ کے ذرائع کا کہناتھا کہ اس بات میں کوئی صداقت نہیں کہ کرونا ویکسین کی دو خوراکیں لگانے والوں کو اجازت نامے سے استثنیٰ دیا گیا ہے ۔انتظامیہ کے مطابق ٹوئٹر ، واٹس ایپ اور سوشل میڈیا کے دیگر ذرائع پر

پھیلائی جانیوالی یہ خبر بے بنیاد ہے متعلقہ انتظامیہ نے واضح کیا کہ حرم مکی شریف میں زائرین کو منظم کرنے کیلئے توکلنا اور اعتمر نا ایپ سے اجازت نامہ حاصل کرنا ضرور ی ہے ۔ بصورت دیگر حرم میں داخل ہونے نہیں دیا جائیگا۔خیال رہے کہ حالیہ دنوں ٹوئٹر اور واٹس ایپ پر یہ افواہ گردش کررہی تھی کہ حرمین انتظامیہ نے فیصلہ کیا ہے کہ جن لوگوں نے ویکسین کی دو خوراکیں لگوالی ہیں وہ اجازت نامے سے مستثنیٰ ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں